افرادی قوت کی تربیت میں چینی تعاون مثالی ہے، محمد زبیر

محمد زبیر
محمد زبیر

تجارتی توازن کیلیے برآمدبڑھاناضروری،شرح تبادلہ میں استحکام کیلیے اقدام کرر ،خطاب۔

راولپنڈی/کراچی: گورنر سندھ محمد زبیر نے کہاکہ چین سے اچھا کوئی دوست ن، چین نے ہر قدم پر ہمارا ساتھ دیا ، سی پیک منصوبوں میں افرادی قوت کی تربیت کے لیے چین کا تعاون مثالی ۔ اس خبر کو بھی پڑھیں : برطانوی وزیرخارجہ نے روسی صدر کو ہٹلر سے تشبیہ دیدی

ای کامرس گیٹ وے اور چائنا پاکستان بزنس انویسٹمنٹ کے تحت سی پیک کے منصوبوں میں افرادی قوت کی تربیت کے سلسلے میں منعقدہ نمائش وسیمینار اورصحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ دنیا کی نظریں پاکستان پر ، ایسی پالیسیاں بنانیجن سے سرمایہ کاری آئے۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں میں سطحی مسائل سے ہٹ کر ایسے اقدامات کیے جانے چاہئیں جن سے کاروبار اور معیشت کی ترقی ممکن ہو۔ اس خبر کو بھی پڑھیں : قومی اقتصادی کونسل کے اجلاس سے تین صوبوں کے وزرائے اعلیٰ کا واک آؤٹ  

محمد زبیر نے کہا سرمایہ کاری معیشت کا اسٹارٹر پوائنٹ ۔ گورنر سندھ نے کہا کہ کراچی اور خصوصا ملک بھر میں ماحول بدل چکا ۔ امن آ گیا ، عوام سی پیک کی افادیت سے بتدریج آگاہ ہور ، روپے کی قدر میں کمی کے حوالے سے گورنر سندھ نے کہا کہ اسحق ڈار سابق جبکہ مفتاح اسماعیل اس وقت فیصلے کرنے کی پوزیشن میں ، شرح تبادلہ میں استحکام کیلیے اقدامات کرر ۔

معیشت کے بارے میں گورنر سندھ نے کہا کہ تجارتی توازن کیلیے برآمدات میں اضافہ از حد ضروری ۔ انہوں نے کہا کہ کے این ایف سی ایوارڈ میں تقسیم کا فارمولہ طے شدہ ، 2013میں مجموعی طور پر 1946 ارب روپے کے ٹیکس جمع ہوئے جبکہ اس سال 4 ہزار ارب روپے کے ٹیکس جمع ہوئے ۔

نمائش میں شریک وائس ایڈمرل سید عارف اللہ حسینی نے کہا کہ نے کہا کہ پاکستان کی نئی نسل کیلیے بہترین موقعکہ چین اور پاکستان کی جامعات اور ٹیکنیکل انسٹی ٹیوٹس کے درمیان اشتراک سے جدید علوم میں مہارت حاصل کریں۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبوں سے پاکستان کی آئندہ نسلوں کو بیش بہا فوائد حاصل ہوں گے۔ نمائش میں چین اور پاکستان کی 60 سے زائد جامعات اور ووکیشنل اداروں نے37 سے زائد تربیتی معاہدے کیے۔

ای کامرس کے نائب صدر عمیر نظام نے کہاکہ معاہدوں کے تحت چین کے اشتراک سے تین ماہ میں پہلا تربیتی مرکز این ای ڈی یونیورسٹی میں قائم کردیا جائیگا۔