بھارتی ٹرین میں مسافروں کو چھپکلی بریانی کے بعد ’’کیڑا پکوڑا‘‘ پیش

keera pakora

نئی دہلی: بھارت میں گزشتہ ہفتے ٹرین میں مسافر کی بریانی سے چھپکلی نکل آئی تھی اور اب ایک مسافر کو ’’کیڑا پکوڑا‘‘ پیش کر دیا گیا ۔

گزشتہ ہفتے پیش آنے والے واقعے کے بعد بھارتی وزارت ریلوے حرکت میں آئی تھی اور کھانے کا معیار بہتر بنانے کی ہدایات بھی جاری کی تھی تاہم ایسا محسوس ہوتاکہ اس پر کوئی عمل درآمد ن کیا گیا۔ بہار سمپرک کرانتی ایکسپریس میں سفر کرنے والے محمد آزاد علی نے شکایت کی کہ انہوں نے ٹرین کی کینٹین سے پکوڑے منگوائےتاہم پکوڑے کے اندر سے ایک بڑا کیڑا برآمد ہوا جسے دیکھ کر ان کی حالت غیر ہو گئی کیوں کہ وہ کچھ پکوڑے اپنے 4 سالہ بیٹے کو کھلا چکے ۔

مسافر نے اس بات کی شکایت کینٹین کے منیجر سے کی جس نے ان سے معذرت کی تاہم ان کے ساتھ موجود ایک مسافر نے ٹوئیٹر پر یہ واقعہ وزارت ریلوے کو بتا دیا جس کے بعد وزیر نے متعلقہ حکام کو واقعے کی تحقیقات کا حکم جاری کر دیا۔ اس کے بعد ہر اسٹیشن پر ریلوے کے بعض اہلکار آتے ر اور محمد علی سے تفصیلات پوچھتے ر۔ ٹرین جب لکھنو پہنچی تو ایک ڈاکٹر بھی آیا جس نے بچے کا طبی معائنہ کیا۔ محمد علی کا کہناکہ پکوڑے سے کیڑا نکلنے کے بعد ڈبے میں موجود کسی بھی مسافر نے ٹرین کا کھانا ن کھایا۔

واضح ر کہ دو ہفتے قبل بھارت کے آڈیٹر جنرل نے پارلیمنٹ کو یہ رپورٹ دی تھی کہ بھارت کی ٹرینوں میں مسافروں کو فراہم کیا جانے والا کھانا انتہائی مضر ہوتا ۔ ریلوے بورڈ کے چیئرمین اے کے متل بھی حال ہی میں اپنے بیان میں یہ کہہ چکےکہ مسافر اپنے گھر سے کھانا لائیں کیوں کہ معیار میں اس کا کوئی نعم البدل ن ہوتا۔