ہفتے میں 150 کیلے کھا کر گزارا کرنے والا نوجوان

haftay

برسٹل، برطانیہ: برطانوی نوجوان ہفتے میں 150 سے زائد کیلے کھا کر اپنی 80 فیصد غذائی ضروریات پوری کر رہااور ڈاکٹروں کی جانب سے خبردار کرنے کے باوجود نوجوان اپنی بہترین صحت، توانائی اور مجموعی کیفیت کی وجہ کیلوں کو قرار دیتے ۔

ڈین کا چہرہ دانوں (ایکنی) سے بھرا تھا جس کے باعث دو سال قبل اس نے سبزی خور بننے کا فیصلہ کیا لیکن بعد میں ان احساس ہوا کہ سبزیوں کو پکانا آسان کام ن اور انسان کے سوا تمام جاندار کچے پھل اور سبزیاں کھاتے ۔ اب وہ گزشتہ 6 ماہ سے کچی خوراک کھا رہاجو 80 فیصد کیلوں پر مشتملاور اسطرح وہ ہفتے میں 150 کیلے کھاتالیکن کبھی کبھار چاول بھی کھا لیتا ۔ اس کے علاوہ کبھی کبھی وہ پالک کی بڑی مقدار میں سیز پتوں والی سبزیاں اور بیریاں شامل کر کے بھی کھاتا ۔

ناشتے میں ڈین 8 سے 12 کیلوں میں نصف پونڈ پالک ملا کر اس کا جوس بنا کر پیتاجبکہ دوپہر میں بیریاں، ناشپاتی اور دیگر پھلوں میں 8 سے 12 کیلے ملاتااور اس کا جوس پیتا ۔ شام میں وہ سبز پتوں والی سبزیوں کی سلاد کھاتا ۔ یہ تمام غذائیں اسے روزانہ 3000 کیلوریز فراہم کرتی ۔

تاہم غذائی ماہرین نے اس عمل کو خطرناک قرار دیاکیونکہ 22 سالہ نوجوان کی خوراک میں پروٹین اور چکنائیاں شامل ن اور آگے چل کر اس کے منفی اثرات مرتب ہو سکتے ۔