عمران خان کو 3دین کی مہلت،حکومت نے جوابی اقدام کااعلان کردیا

لاہور(آئی این پی)پنجاب حکومت کے ترجمان ملک محمد احمد خان نے سپریم کورٹ سے عمران خان کے الزام پر از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان 3روز میں 10ارب کی پیشکش لے کر آنے والے شخص کا نام بتائیں بصورت دیگر ان لیگل نوٹس بھجوائیں گے اورعدالت میں انکے خلاف ہتک عزت کا دعویٰ دائر کیا جائے گا ،لاڑکانہ سے لے کر بنی گالا تک اگر آئین کے آرٹیکل 62، 63 کا اطلاق ہونے لگا تو کوئی اختلافی نوٹ ن آئے گا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈائریکٹوریٹ جنرل پبلک ریلیشنز پنجاب ( ڈی جی پی آر) میں ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔ ترجمان پنجاب حکومت ملک محمد احمد خان نے عمران خان کی جانب سے شہبازشریف پر لگائےالزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ لیگل ٹیم عمران خان کو نوٹس بھجوانے کا جائزہ لے رہیاور وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی طرف سے ذاتی حیثیت میں نوٹس بھجوایا جائے گا ۔ یہ اعلان سیاسی سٹنٹ ن بلکہ اس پر عمل کر کے دکھائیں گے اورہم ان جلد قانون کے کٹہرے میں لا کر ان کا جھوٹ بے نقاب کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری جلسوں میں وفاق کے خلاف صوبائی تعصب اور بے بنیاد پراپیگنڈا کر کے صرف اپنی سیاست چمکا ر ۔چار دہائیوں سے وفاق کی جماعت ہونے کی دعویدار پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری خیبرپختونخوا ہ میں کھڑے ہو کر یہ ک کہ سی پیک میں خیبر پختوانخواہ کا حصہ شہباز شریف پنجاب لے تو وہ حقائق سے واقف ن۔شاید آصف زرداری یہ ن جانتے کہ سی پیک کے دو شعبوں میں سب سے زیادہ حصہ سندھ کے پاس ، توانائی کا منصوبہ چا پنجاب میں لگے، سندھ میں یا خیبر پختوانخواہ میں اس نے پیداوار نیشنل گرڈ کو ہی پہنچانی ۔پاک چین راہداری ریاست پاکستان کا منصوبہجس سے پورے ملک کو یکساں فوائد حاصل ہونے ۔ انہوں نے کہاکہ آصف زرداری صرف سیاسی مطابقت پیدا کرنے کے لیے بے بنیاد الزمات سے پاکستانی کی سالمیت کو چیلنج نہ کریں۔ انہوں نے پیپلز پارٹی کی طرف سے لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاج کے سوال کے جواب میں کہا کہ پیپلز پارٹی کا احتجاج کھسیانی بلی کھمبا نوچے کے مترادف۔ ترجمان پنجاب حکومت نے بھارتی صنعتکار سجن جندال کی وزیر اعظم سے ملاقات بارے سوال کے جواب میں کہا کہ یہ باضابطہ سرکاری ملاقات ن تھی بلکہ ذاتی نوعیت کی ملاقات تھی ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کا وفاقی دارالحکومت میں جلسہ پانامہ کیس کے حوالے سے عدلیہ کو دباؤ میں لانے کی کوشش۔ عمران خان کاسپریم کورٹ کے فیصلے کو تسلیم نہ کرنا توہین عدالت کے مترادف۔ عمران خان عدلیہ اور اس کے فیصلوں کا احترام کرنا سیکھیں۔

متعلقہ خبر یں

روزانہ خبریں اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

Leave a Reply