دورۂ انگلینڈ و آئرلینڈ کے لیے قومی کرکٹرز کی فٹنس جانچ آج شروع ہو گی

فاسٹ بولر وہاب ریاض کا ٹیسٹ اسکواڈ میں جگہ بنانا مشکل، راحت علی ، شاداب خان اورکاشف بھٹی کوبھی برطانیہ جانے کا موقع مل سکتا ۔ لاہور: پاکستان کر کٹ ٹیم کے دورئہ انگلینڈ اورآئرلینڈ کے لیے کھلاڑیوں کے فٹنس ٹیسٹ کا آغاز آج سے لاہور میں ہوگا۔ ٹوئنٹی20 کا ہنگامہ ختم ہونے کے بعد اب ٹیسٹ کرکٹ کی باری آ گئی ،  پاکستانی کرکٹ ٹیم کو رواں ماہ کے آخر میں برطانیہ کے دورے پر جانا ، جہاں کینٹ کاونٹی سے چار روزہ میچ کے بعد گرین کیپس11سے15مئی تک آئرلینڈ سے واحد ٹیسٹ کھیلیں گے، ڈبلن کے قریب مالاہائیڈ میں آئرش ٹیم اپنا اولین پانچ روزہ میچ کھیلنے کیلیے بے تاب ،اس کے بعد انگلینڈ سے 2 ٹیسٹ اور پھر اسکاٹ لینڈ کیخلاف2 ٹوئنٹی20  میچز ہونا ۔ اس خبر کو بھی پڑھیں : لاہور قلندرز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست دیدی اہم دورے سے قبل پی سی بی نے تمام کھلاڑیوں کی فٹنس جانچنے کا فیصلہ کیا تھا جس کو عملی جامہ پیر سے پہنایا جارہا ۔ نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں شیڈول کھلاڑیوں کے مختلف  گروپس میں ٹیسٹ لیے جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق فٹنس ٹیسٹ کے لیے سینٹرل کنٹریکٹ حاصل کرنے والے  پلیئرزکوبلایا گیاتاہم فٹنس مسائل سے دوچار یاسر شاہ، سہیل خان اور عماد وسیم فٹنس ٹیسٹ ن دیں گے۔ ذرائع کا کہناکہ یاسر شاہ گزشتہ ہفتے کول کی انجری کا شکار ہو ، ان کی انجری کا جائزہ لیا جائے گا جس کے بعد  ہی ان کی ٹیم میں شمولیت کا فیصلہ ہوگا۔ اس خبر کو بھی پڑھیں : عماد وسیم کی فٹنس کے حوالے سے تمام شکوک دور گزشتہ برس سینٹرل کنٹریکٹ کا حصہ بننے والے  35 کرکٹرز کے ساتھ پی ایس ایل  میں عمدہ کارکردگی  کی بدولت ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹوئنٹی 20  سیریزمیں انٹرنیشنل کیریئرکا آغاز کرنے والے حسین طلعت، آصف علی اورشاہین شاہ آفریدی کے ساتھ کئی برس سے نظرانداز فوادعالم کوبھی ممکنہ کھلاڑیوں میں شامل کرنے پراتفاق کیا گیا ، گزشتہ معاہدے کی میعاد  یکم جولائی 2017سے30 جون  2018  تک ، فٹنس ٹیسٹ کے بعد نئے سینٹرل کنٹریکٹ  کے لیے فہرست کی تیاری بھی شروع ہو جائیگی۔ 11سے23اپریل تک ٹیسٹ اسکواڈ کا تربیتی کیمپ لگے گا،کیمپ کے بعد حتمی ٹیسٹ اسکواڈ منتخب ہوگا۔ مزید معلوم ہواکہ چیف سلیکٹر انضمام الحق نے 17 کھلاڑیوں کے ناموں کی تجویز دیجبکہ وہاب ریاض کا ٹیسٹ اسکواڈ میں جگہ بنانا مشکل ۔راحت علی کو ٹیم میں شامل کیے جانے کا امکانجبکہ یاسر شاہ کے ان فٹ ہونے کے باعث شاداب خان کے ساتھ کاشف بھٹی کوبھی اسکواڈ کا حصہ بنائے جانے کا امکان ۔ اس خبر کو بھی پڑھیں : قومی ٹوئنٹی 20 کپ کے انعقاد پر سوالیہ نشان انگلینڈ سے ٹیسٹ میچز کے بعد اسکاٹ لینڈ سے ٹی ٹوئنٹی میچزکیلیے مزید 3 سے4پلیئرز کو بھیجا جائے گا۔یاد ر کہ پاکستان کوگذشتہ برس اکتوبر میں سری لنکا کیخلاف آخری سیریز میں 2-0 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا، اس طرز میں کارکردگی شایان شان نہ ہونے کے سبب سلیکٹرز کو بہترین اسکواڈ تشکیل دینے کا چیلنج درپیش ہوگا۔

متعلقہ خبر یں

روزانہ خبریں اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔