ینگ بریگیڈ مضبوط انگلش قلعہ فتح کرنے کے لیے تیار

موسم بھی پریشان کرے گا، ٹیم تھوڑی ناتجربہ کارمگرپلیئرزکو اعتماد دے ر ،کپتان۔ لاہور: ینگ پاکستانی بریگیڈ مضبوط انگلش قلعہ فتح کرنے کے لیے تیارجب کہ کپتان سرفراز احمد کا کہناکہ ٹیم میں کئی نوجوان کھلاڑی شامل ہونے کے باوجود تینوں ٹیسٹ میں کامیابی کے لیے پُرعزم ۔ یہ بھی پڑھیں: سرفرازاحمدکی والدہ نے بیٹے کوکیانصیحت کی کہ پاکستان چیمپنزٹرافی بھی جیت جائے گا دورۂ آئرلینڈ اور انگلینڈکیلیے منتخب کرکٹرز کی ٹریننگ کے تیسرے اور آخری روز ٹارگٹ میچ کھیلا گیا، مشکل کنڈیشنز میں3ٹیسٹ میچز کی تیاری کیلیے ہر بیٹسمین کو45 منٹ کریز پر رہنے کا ٹاسک ملا، بولرزکو6، 6اوورز کرنا ، فخرزمان 22 منٹ بعد آؤٹ ہوئے تو اظہر علی، اسد شفیق،بابر اعظم، حارث سہیل اور دیگر بیٹسمینوں کو بھی نیٹ پر بلایا گیا،بولرز نے وکٹیں اڑانے جبکہ بیٹسمینوں نے بچانے کیلیے پوری جان لڑائی تاہم بیٹسمین ثابت قدم ر،1،2کے سوا کسی نے وکٹ ن گنوائی۔ ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور معاون اسٹاف خامیوں کی نشاندہی کرتے نظر آئے، میدان میں گذشتہ روز کی بانسبت گرمی زیادہ لیکن مجموعی طور پر موسم خوشگوار تھا، کپتان سرفراز احمد، اظہر علی، سمیع اسلم، فخرزمان، امام الحق، اسد شفیق، حارث سہیل، بابر اعظم ، عثمان صلاح الدین،سعد علی، شاداب خان ،فہیم اشرف، محمدعامر، حسن علی اور راحت علی پر مشتمل قومی اسکواڈ اتوار اور پیر کی درمیانی شب روانہ ہوگا، کاؤنٹی کرکٹ کھیلنے میں مصروف محمد عباس انگلینڈ میں ہی دیگر کرکٹرز کو جوائن کریں گے یہ بھی پڑھیں: ۔صرف موت ہی مجھ سے سعودی تخت چھین سکتی ، ولی عہد محمد بن سلمان یادرکہ آئرش ٹیم اپنی تاریخ کا پہلا ٹیسٹ11سے 15مئی تک ڈبلن میں مہمان پاکستان کیخلاف کھیلے گی، انگلینڈ سے 2ٹیسٹ پر مشتمل سیریز 24 مئی کو لارڈز میں شروع ہوگی، طویل فارمیٹ کے دوسرے میچ کا آغاز یکم جون سے لیڈز میں ہونا ۔ دوسری جانب قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہاکہ انگلش کنڈیشنز ہمیشہ مشکل ہوتی ، 2016 کاگذشتہ ٹور جون میں شروع ہوا تھا،اس بار ہم نسبتاً پہلے جا ر ،یونس خان اور مصباح الحق جیسے سینئرز کی خدمات بھی حاصل ن،ٹیم تھوڑی ناتجربہ کار ، البتہ ہم کھلاڑیوں کو اعتماد دینے کی پوری کوشش کرر ،انگلینڈ میں قبل ازوقت جانے اور ٹور میچ کھیل کر کنڈیشنز سے بہتر انداز میں ہم آہنگ ہونے کا موقع بھی ملے گا۔ سرفراز احمد نے کہا کہ کئی نوجوان کھلاڑی شامل ہونے کے باوجود تینوں ٹیسٹ میں کامیابی کیلیے پُرعزم ،نئے کرکٹرز کو بھی اچھی طرح معلومکہ بڑے پلیٹ فارم پر کارکردگی دکھانے سے انھیں اپنا انٹرنیشنل کیریئر آگے بڑھانے میں مدد ملے گی،انھوں نے کہا کہ عثمان صلاح الدین ٹیم کیساتھ ر ،سعد علی نے ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی دکھائی ، امیدکہ دونوں اچھا کھیل پیش کریں گے یہ بھی پڑھیں: ۔زرداری جیسے کرپٹ انسان کے ساتھ کھڑا ن ہو سکتا، عمران خان سری لنکا کیخلاف ٹیسٹ سیریز میں ناقص پرفارمنس کے باوجود انگلینڈ میں جیت کی توقعات وابستہ کرنے کے سوال پر سرفراز احمد نے کہا کہ کنڈیشنز مختلف ضرورلیکن ٹور کی تیاری کیلیے کرکٹرز نے بہت محنت کی ، بیٹنگ اور بولنگ میں مہارت بہتر بنانے کیلیے کام ہوا، امیدکہ اچھے نتائج برآمد ہوں گے۔ صرف ایک نوجوان اسپنر پر سارا بوجھ ڈالنے کے سوال پر انھوں نے کہا کہ یاسر شاہ فٹ ہوتے تو انھیں لے کر جاتے، شاداب خان کے پاس لیگ اسپن اور گگلی دونوں ورائٹیزاسی لیے انھیں منتخب کیا، برطانیہ میں سردی بہت ، یہ بھی دیکھنا ہوگا کہ اسپنر کوکھلانے کی ضرورت بھییا ن،حارث سہیل اور اسد شفیق بھی بطور سلو بولرز ٹیم کے کام آسکتے ۔ کپتان نے کہا کہ پیس بیٹری سمیت پاکستانی بولنگ لائن بہت اچھی ،بیٹسمین اگر 200رنز بھی بنا لیں تو بولرز حریف ٹیم کو دباؤ میں لا سکتے ۔ ایک سوال پر سرفراز احمد نے کہا کہ آئرلینڈ کو ہوم کنڈیشنز میں آسان حریف ن سمجھا جا سکتا،میزبان ٹیم میں کاؤنٹی میچزکا تجربہ رکھنے والے سینئرز موجود ،ٹیسٹ میچ میں اچھا مقابلہ ہوگا۔

متعلقہ خبر یں

روزانہ خبریں اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔