کوچز کی توجہ مڈل آرڈر کو مستحکم بنانے پر مرکوز

تاخیر سے اسکواڈ کو جوائن کرنے والے محمد عامر بھی بھرپور ردھم میں نظر آئے۔ کینٹربری: آئرلینڈاور انگلینڈ کیخلاف ٹیسٹ میچز کی تیاری کیلیے دوسرے روز بھی پاکستانی کرکٹرز کی پریکٹس کا سلسلہ جاری رہا جب کہ کوچز کی توجہ مڈل آرڈر کو مستحکم بنانے پر مرکوز رہی۔ آئرلینڈ اور انگلینڈ کیخلاف ٹیسٹ میچز کی تیاری کیلیے قبل ازوقت کینٹربری میں ڈیرے ڈالنے والے پاکستانی کرکٹرز نے بدھ کو مشقوں کا آغاز کیا تھا،یہ سلسلہ گزشتہ روز بھی جاری رہا،کھلاڑیوں نے وارم اپ کے بعد جسمانی استعداد بہتر بنانے پر کام کیا،کوچز نے ٹیم کو مختصر فاصلے کی دوڑوں کے بعد جمپ اور دیگر وزرشوں میں سرگرم رکھا۔ فیلڈنگ پریکٹس میں اونچے اور کلوز کیچز کی الگ الگ مشق ہوئی،اوپنرز اظہر علی،سمیع اسلم،امام الحق اور فخرزمان کے بعد مڈل آرڈر کو مستحکم بنانے پر خصوصی توجہ مرکوز رکھی گئی۔ بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور نیٹ کے بہت قریب کھڑے ہوکر اسد شفیق، بابر اعظم اور حارث سہیل کے اسٹروکس چیک کرتے ر۔ انھوں نے بیٹ ہاتھ میں پکڑکر آف اسٹمپ سے باہر جاتی گیندوں کا بہتر انداز میں سامنا کرنے کیلیے مشورے دیے، مڈل آرڈر میں شامل بیٹسمین ایک نیٹ میں پیسرز کا سامنا کرنے کے بعد دوسرے میں اسپنرز کی گیندیں بھی کھیلتے ر، حارث سہیل نے بیٹنگ کے بعد اسپن بولنگ کیلیے شاداب خان کو بھی جوائن کیا۔ ویزا مسائل کے سبب تاخیر سے اسکواڈ کو جوائن کرنے والے محمد عامر بدھ کو ٹریننگ میں شریک ن ، گذشتہ روز وہ نیٹ پر بھرپور ردھم میں نظر آئے، دوسرے پیسر راحت علی بھی بولنگ کوچ اظہر محمود کی خاص توجہ کا مرکز بنے، حسن علی اور محمد عباس نے لائن اور لینتھ بہتر بنائی۔ سردی کی وجہ سے چند کرکٹرز نے سوویٹرز اور کوچنگ اسٹاف کے کئی ارکان نے کیپس پہنے رکھیں۔

متعلقہ خبر یں

روزانہ خبریں اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔