شام کے ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی کرنے کا امکان برقرار

world cupp

شام نے قطر کو ایک فٹبال میچ میں 3-1 سے اہم ترین شکست دے کر اس
امکان کو زندہ رکھا ہے کہ وہ پہلی مرتبہ ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی
کر جائیں۔

عمر خربین نے دونوں ہاف میں ایک ایک گول کیا اور محمود المواس نے
اضافی وقت میں ایک اور گول کیا۔ اس کامیابی کے بعد شام اپنے گروپ
کی درجہ بندی میں ازبکستان کو پیچھے چھوڑتے ہوئے تیسرے نمبر پر
پہنچ گیا ہے۔

اس گروپ کی دو بہترین ٹیمیں خودکار طریقے سے روس کے 2018 ورلڈ کپ
کے لیے کوالیفائی کر لیں گی اور تیسرے نمبر پر آنے والی ٹیم کو
ایک پلے آف میچ کھیلنا پڑے گا۔

قطر کی شکست کا مطاب یہ ہے کہ وہ اب 2018 کے ورلڈ کپ کے لیے
کوالیفائی نہیں کرسکیں گے اور 2022 میں میزبان ہونے کے ساتھ ساتھ
پہلی بار ورلڈ کپ کھیلیں گے۔

شام اب گروپ کی فاتح ایران سے تہران میں اس گروپ کا فائنل میچ
منگل کو کھیلیں گے۔

اگر شام اس گروپ میں دوسرے درجے پر آ جاتا ہے تو وہ جنوبی کوریا
اور ازبکستان کے میچ کے نتیجے کی بنیاد پر خودکار طریقے سے ورلڈ
کپ کے لیے کوالیفائی کر سکتے ہیں۔

جنوبی کوریا کی ٹیم جمعرات کو ایران کے خلاف کسی گول کے بغیر میچ
برابر کر سکی ہے اور اگر ان کی آخری میچ میں شکست ہوئی اور شام
ایران کو ہرا پایا تو یہ 1982 سے اب تک پہلا موقع ہوگا کہ جنوبی
کوریا ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی نہیں کر سکے۔

یاد رہے کہ اس گروپ میں چین بھی تیسری پوزیشن پر آ سکتا ہے اگر وہ
قطر کو شکست دے دیں اور دیگر کچھ میچز میں مخصوص نتائج آ جائیں۔

دوسری جانب جاپان نے آسٹریلیا کو شکست دے کر اپنے مسلسل چھٹے ورلڈ
کپ کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

Leave a Reply