عراق میں پاور پلانٹ پر خود کش حملے میں 7 افراد ہلاک

بغداد: عراقی دارالحکومت کے شمال میں واقع ایک پاور پلانٹ میں خود کش حملے میں 7 افراد ہلاک اور 12 زخمی ہو ۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بغداد سے 62 میل شمال کی جانب واقع پاور پلانٹ میں تین حملہ آور داخل ہوئے جنہوں نے خود کش جیکٹس پہن رکھی تھیں اورجدید ہتھیاروں اور دستی بموں سے بھی لیس ۔ مقامی عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ عراقی سیکیورٹی فورسز کی وردیوں میں ملبوس حملہ آورں نے پلانٹ کے اندر داخل ہوتے ہی اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی جس کے بعد ایک حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ خود کش حملے کے نتیجے میں 7 افراد ہلاک اور 12 زخمی ہوئے جب کہ دو حملہ آور سیکیورٹی فورسز سے فائرنگ کے تبادلے میں مارے ۔ دھماکے کے نتیجے میں پاور پلانٹ کے ملازمین کے لیے قائم کی جانے والی عارضی رہائش گاہوں کو بھی نقصان پہنچا جبکہ سیکیورٹی فورسز نے تمام ملازمین کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا۔ اس حملے کی ذمہ داری تاحال کسی تنظیم نے قبول ن کیالبتہ عراق میں شدت پسند تنظیم داعش حالیہ برسوں میں متعدد حملے کر چکی ۔ 2014 میں داعش نے عراق کے ایک تہائی علاقوں پر قبضہ کر لیا تھا تاہم اب صرف دو علاقوں میں اس کا قبضہ باقی رہ گیا ۔

متعلقہ خبر یں

روزانہ خبریں اور اس کی پالیسی کا کمنٹس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔