اسمارٹ فون کے زہر سے چھٹکارا پائیے؛ لیکن کیسے؟

smart phone

کراچی: اسمارٹ فون اور ٹیبلٹ وغیرہ پر حد سے زیادہ انحصار اور ان کے بغیر زندگی ادھوری ہونے کے احساس کو عمومی طور پر ’’اسمارٹ فون زہر آلودگی‘‘ کہا جاتاجس کی تفصیلات پہلے ایک رپورٹ میں بیان کی جاچکی ۔

ذیل میں کچھ عملی تدابیر دی جارہیجن اختیار کرکے آپ خود کو اسمارٹ فون کی زہر آلودگی سے محفوظ رکھ سکتے ۔ دنیا بھر میں ان طریقوں کو ’’اسمارٹ فون زہر ربائی‘‘ (اسمارٹ فون ڈی ٹاکس) کہا جاتا ۔

ابتداء میں یہ ساری کارروائی آپ کو انتہائی مشکل لگے گی، وہ اس لیے کیونکہ آپ خود اس زہر اور نشے میں مبتلالیکن ہمت اور مستقل مزاجی کے ساتھ آپ حیرت انگیز نتائج خود محسوس کریں گے۔ اسمارٹ فون ڈی ٹاکس کی اہم تدابیر کیا ؟ ملاحظہ کیجیے:

بتدریج تبدیلی

اسمارٹ فون کا استعمال کم کرنے کی عادت میں بتدریج کمی کیجیے۔ اس کا ایک دلچسپ طریقہ یہکہ اسمارٹ فون کو اپنے سامنے رکھیے اور 5 سے 15 منٹ تک اسے ہاتھ نہ لگانے کی کوشش کیجیے۔ جب یہ کام آسان ہوجائے تو پھر یہ دورانیہ بتدریج بڑھاتے ہوئے 30 منٹ، 45 منٹ اور 1 گھنٹے تک بڑھائیے، بلکہ یہ عمل جاری رکھیے یہاں تک کہ اسمارٹ فون کا استعمال صرف ضروری کاموں تک محدود ہو کر رہ جائے۔

دوستوں سے میل جول

سوشل میڈیا پر بہت ہم میں سے ہر ایک کے سینکڑوں ن تو درجنوں دوست ضرور ہوں گے لیکن کسی دعوت یا محفل میں کہ جہاں آپ کے دوست احباب اور عزیز رشتہ دار حقیقتاً موجود ہوں، وہاں اسمارٹ فون کو جیب میں ہی رہنے دیجیے اور دوستوں سے میل جول بڑھائیے۔

بار بار ای میل اور سوشل میڈیا اسٹیٹس چیک نہ کیجیے

آج کے زمانے میں ای میل باہمی رابطے کا ایک اہم ذریعہلیکن اسمارٹ فون کی سہولت استعمال کرتے ہوئے بار بار اور وقت بے وقت ای میل چیک کرنا درست ن۔ اس کےلیے بہتر ہوگا کہ صرف اسی وقت ای میل چیک کیجیے جب ضرورت ہو۔ خود کو پابند کیجیے کہ رات میں سوتے سے جاگ کر فوراً ہی ای میل چیک ن کریں گے، یہاں تک کہ اس کی شدید ترین ضرورت نہ ہو۔ یہ تمام مشورے سوشل میڈیا کے حوالے سے بھی دیئے جارجو آج کل ای میل کے مقابلے میں صارفین کا ک زیادہ وقت کھا جاتا ۔

کام کے وقت کام

جب دفتر میں کام کرر ہوں یا اسکول، کالج، یونیورسٹی وغیرہ میں پڑھائی کرر ہوں تو اسمارٹ فون کی پروفائل سائلنٹ کرتے ہوئے اسے جیب میں یا پھر دراز میں بند کرکے رکھیے؛ اور یہ تصور کرنے کی کوشش کیجیے کہ آپ کے پاس کوئی اسمارٹ فون موجود ہی ن۔ یاد ر کہ کام کے وقت کام اور تفریح کے وقت تفریح کا اصول اپنا کر آپ اپنی پیشہ ورانہ زندگی اور تعلیم، دونوں کو بہتر بناسکتے ۔ اور اس معاملے میں اگر اسمارٹ فون آپ کا دشمن ثابت ہورہاتو اسے بھی ایک طرف رکھ دیجیے۔

نوٹی فکیشن ’’آف‘‘ کردیجیے

سوشل میڈیا سے لے کر نیوز ویب سائٹس تک، آج کل ’’نوٹی فکیشن‘‘ کا بہت زور ۔ مطلب یہ کہ اگر آپ کے اسمارٹ فون پر تھری جی یا وائی فائی کنکشن کام کررہالیکن آپ کسی بھی ویب سائٹ پر سرفنگ ن کرر یا سوشل میڈیا پر موجود ن تب بھی کسی نئی خبر، پیغام یا قریبی دوست کی جانب سے اسٹیٹس اپ ڈیٹ کرنے کی صورت میں اسمارٹ فون سے گھنٹی جیسی آواز نکلتیجو آپ کو اس طرف متوجہ کرتی ۔ آپ فوراً اسمارٹ فون کی طرف لپکتےاور دیکھتےکہ کیا ’’نیا‘‘ آیا ۔ ہر ایپ میں نوٹی فکیشن آف کرنے کا آپشن بھی ہوتا ، اسے استعمال کرتے ہوئے خواہ مخواہ کے اور موقع بے موقع نوٹی فکیشن آف کردیجیے۔ اس سے آپ کی زندگی میں اسمارٹ فون کی بار بار دخل اندازی ن ہوگی۔

ملاحظہ فرمائیے کہ اوپر دی گئی کسی ایک تجویز کا براہِ راست تعلق ٹیکنالوجی سے ن بلکہ اس عادت اور مزاج سےجس کے باعث ٹیکنالوجی کا سیلاب ہم پر حاوی ہوگیا ۔

یہ بھی واضح ر کہ ’’اسمارٹ فون ڈی ٹاکس‘‘ کا کام آپ کو خود کرنا ہوگا اور اس کےلیے کوئی ایپ دستیاب ن (اور شاید ہونی بھی ن چاہیے)۔