بچوں کے ساتھ ساتھ بڑھنے والے کپڑے تیار

bherne walay kapray tayyar

لندن: والدین بچوں کے لیے ہر چند ماہ بعد کپڑوں کے بارے میں فکرمند رہتے ۔ ایک جانب تو اس میں وقت ضائع ہوتاتو دوسری جانب مہنگے کپڑے خریدنے میں مشکل پیش آتی ۔

چھوٹے بچوں کے کپڑے دو مرتبہ دھلنے کے بعد ان ن آتے کیونکہ چھوٹے بچے بہت تیزی سے بڑھتےلیکن اب پیٹٹ پلی نامی ایک کمپنی نے ایسا اسمارٹ لباس بنایاجسے ایک مرتبہ خریدنے کے بعد دو سال تک بچوں کے لیے دوسرا لباس خریدنے کی ضرورت ن ر گی۔

پیٹٹ پلی کے مطابق پیدائش کے دو سال تک بچے سات مرتبہ جسامت بڑھاتےاور ان کے لیے سات مرتبہ کپڑے خریدنے پڑتے ۔ اس کمپنی نے جو لباس بنایاوہ 4 سے 36 ماہ تک کے بچوں کے لیے فٹ بیٹھتا ۔

کمپنی کے سربراہ ریان ماریو یاسین پیشے کے لحاظ سے انجینیئر اور انہوں نے کہا کہ بچے کو بار بار نیا سائز پہنا کر ہم زمین کے وسائل خرچ کر راور دوسری جانب آبادی اس پر بڑی رقم خرچ کرتی ۔ ان کا تیار کردہ لباس واٹر پروف، ہوا پروف، پائیدار اور بار بار دھونے کے قابل ۔

اس لباس کے اندر خاص لچکدار مٹیریل شامل کیا گیااور جب ان کھینچا جاتاتو کپڑا پتلا ہونے کی بجائے موٹا ہو جاتااور یہ خاصیت بلٹ پروف لباسوں میں پائی جاتی ۔ اس ایجاد کو برطانیہ میں جیمز ڈائسن ایوارڈ دیا گیااور اب سالانہ ڈیزائن مقابلے کے لیے منتخب کر لیا گیا ۔ تاہم کمپنی اپنی مصنوعات کو مارکیٹ میں لانا چاہتیخواہ وہ مقابلہ جیتے یا ہارے۔

تصاویر میں لباس کا ایک ماڈل دکھایا گیالیکن اگلے مرحلے میں لباس کو مزید خوبصورت، آرام دہ اور دیدہ زیب بنایا جائے گا۔ اسطرح امیدکہ شیر خوار بچوں کے لیے بار بار کپڑے خریدنے کی ضرورت کم ہوجائے گی۔